قرض برائے رائس ٹرانسپلانٹر

چاول ملک کی پانچ بڑی فصلوں میں سے ایک ہے۔ اور انسانی خوراک میں اس کو بنیادی حیثیت حاصل ہے۔ چاول کی کاشت ایک تھکا دینے والا محنت طلب کام
ہے۔ چاول کی کاشت میں میکانائزیشن کے ذریعے کاشتکار کا کام سہل کیا جا سکتا ہے، جس سے رفتار کے ساتھ پیداواری صلاحیت میں بھی اضافہ ہو سکتا ہے۔

اس مقصد کے لیے، رائس ٹرانسپلانٹر سادہ، آسان اور چاول کی پیوندکاری اور پیشہ ورانہ زرعی مہارت کی ایک نئی جہت کا دروازہ کھولتا ہے۔ رائس ٹرانسپلانٹر دستی پیوندکاری کے مقابلے میں 20گنا زیادہ مؤ ثرہے۔ زرعی ترقیاتی بینک لمیٹڈ اپنے ممکنہ صارفین کے لیے ان کی کاشتکاری کی ضروریات کے مطابق درج ذیل شرائط کے تحت زرعی قرضے کی سہولت فراہم کرتا ہے۔

قرض برائے خرید زرعی آلات (چاول /گندم سٹرابیلنگ مشین و منی روٹاویٹر (واکنگ ٹریکٹر)

زرعی پیداوار میں اضافے کیلئے عالمی سطح پر بدلتے ہوئے رجحانات کے مطابق نئی ٹیکنالوجی اور جدید زرعی آلات کا استعمال وقت کی ضرورت ہے۔ اس مقصد کے حصول کیلئے زرعی ترقیاتی بینک لمیٹڈ درج ذیل زرعی مشینوں کی خرید اور کسان بھائیوں کی سہولت کیلئے قرضہ فراہم کرتا ہے۔
چاول /گندم سٹرابیلنگ مشین
سٹرابیلنگ مشین گندم اور دھان کے بھُوسے کو ایک خاص دباؤ کے تحت گانٹھوں میں تبدیل کرتی ہے تا کہ بھوسے کی محفوظ طریقے سے نقل و حمل آسان ہو سکے۔ کٹائی کے بعد گندم /دھان کے بھوسے کو جمع کرنے اور دوبارہ استعمال کے قابل بنانے میں یہ مشین معاون ثابت ہوتی ہے۔ دھان کے بھوسے کا بیلر ٹریکٹر سے منسلک ہوتا ہے۔ یہ بھُوسے کو اکٹھا کرتا ہے اور ہائیڈرالک سسٹم کے ذریعے گانٹھوں میں منتقل کرتا ہے۔ مشین اگلی فصل کیلئے زمین تیار کرتی ہے، قدرتی اجزا ء کو محفوظ کرتی ہے اور اس طرح کسان کی آمدنی میں اضافے کا باعث بنتی ہے۔
منی روٹاویٹر(واکنگ ٹریکٹر)
منی روٹاویٹر ایک ہلکی اور انتہائی کارآمد مشینری ہے جو چھوٹے باغات کی دیکھ بھال اور تیاری کے لیے موزوں ہے۔ یہ 4سے 7انچ مٹی کو نرم کرتا ہے اور ہوا دے سکتا ہے۔ یہ جڑی بوٹیوں پر قابو پانے اور مٹی کے صاف کرنے کے لیے بہترین مشینری ہے جسے چھوٹے کھیتوں، پھلوں اور سبزیوں، باغات، باغبانی اور نرسر یوں کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ منی روٹاویٹر یا واکنگ ٹریکٹر مٹی کی حالت کو بہتر بنانے، جڑی بوٹیوں پر قابو پانے، بیجوں کی تیاری اور چھوٹے کھیتوں میں کھدائی کے لیے بہت موزوں ہے۔

قرضہ برائے شہد کی مکھیاں پالنا بطور گرین بینکنگ پراڈکٹ

شہد کی مکھیاں پالنا ایک گرین بینکنک پراڈکٹ ہے شہد کی مکھیاں حیاتیاتی تنوع، ماحولیاتی نظام اور زندگی کی بقاء کے لئے قدرتی مربوط نظام میں توازن برقرار
رکھنے میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ شہد کی مکھیاں پولینر کے طور پر موجودہ زرعی پیداوار کی سطح کو برقرار ر کھنے میں مدد کرتی ہیں۔ شہد کی مکھوں کی مقدار میں کمی خوراک میں عدم
تحفظ کا باعث ہے شہد کی مکھیوں کے بغیر نہ اچھی خوراک ہے نہ اچھا مستقبل ہے۔ لہٰذا کرہِ ارض کے ماحولیاتی توازن کو برقراررکھنے کے ساتھ ساتھ غذائی تحفظ کے لیے شہدکی مکھیاں پالنے کی سرگرمیوں کو فنانسنگ اور فروغ دینے کی اشد ضرورت ہے۔
شہد کی مکھیاں پالنے کے فوائد
(i شہد کی مکھیاں پالنے سے پولینیشن کو فروغ ملتا ہے۔
(ii شہد کی مکھیاں پالنے سے شکاریوں کو خوراک فراہم ہوتی ہے۔
(iii شہد کی مکھیوں سے حاصل ہونے والا مواد بہت سی صنعتوں میں استعمال ہو تا ہے جس میں کاسمیٹکس انڈسٹری، پالش کرنے کی صنعت اور ادویات تیار کرنے کی
صنعت وغیرہ شامل ہیں۔
(iv فطرت کو برقرار رکھنے کے لیے شہد کی مکھیوں کو پالنا ضروری ہے۔
(v شہد کی مکھیاں بہت سے بیجوں، گری دار میوے، بیر اور پھلوں کی پیداوار کا سبب ہیں۔ جو جنگلی جانوروں کیلئے خوراک کا اہم ذریعہ ہیں۔

قرضہ سکیم برائے ملک چِلنگ یونٹ

ڈیری لائیو سٹاک شعبہ کو ترقی دینے، دودھ کی ترسیل و تقسیم کو بہتر طریقے سے سر انجام دینے اور پورے ملک میں اس شعبہ سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی آمدنی بڑھانے کیلئے زرعی ترقیاتی بینک لمیٹڈ نے چھوٹے پیمانے پر ملک چلنگ یونٹ کے قیام کی سکیم کا اجراء کیا ہے۔

قرضہ سکیم برائے سیاہ آسٹرالوپ مرغی (برائے پیداوار انڈے وگوشت)

آج کل کالے رنگ کی آسٹرالوپ مرغی اپنے انڈوں کی پیداوار زیادہ وزن اور لوکل نسل کی مرغیوں کی طرح آسانی سے پالی جانے کی وجہ سے بہت شہرت رکھتی ہیں۔ اس نسل کی مرغیوں کو گھریلو اور تجارتی بنیادوں پر استعمال کرنے کی ضرورت ہے۔
زرعی ترقیاتی بینک اپنے کسانوں کو آسٹرالوپ فارمنگ کیلئے مرغے، مرغیوں، چوزوں اور انڈوں کیلئے خصوصی تعاون کرے گا
مذکورہ بالا مقصد کیلئے بینک انتظامیہ سکیم متعارف کروا رہی ہے۔

قرضہ سکیم برائے گولڈن /مصری مرغی (برائے پیداوار انڈے وگوشت)

صنعتِ مرغبانی (پولٹری) لائیو سٹاک کے شعبے میں اپنی مخصوص پیداواری صلاحیت اور ملک می مجموعیGDP میں شراکت کیوجہ سے ایک خاص اہمیت کی حامل ہے۔ اس کا شمارحیاتیاتی پروٹین کے حصول کے موثر ذرائع میں ہوتا ہے پاکستان میں پولٹری اعلیٰ حیاتیاتی پروٹین والی خوراک کی طلب و رسد کے درمیان فرق کو کم کرنے میں اہم کردار ادا کر رہی ہے۔
مستقبل میں گولڈن /مصری پولٹری فارمنگ کی ترقی کے روشن امکانات ہیں کیونکہ اس صنعت کیلئے تمام مطلوبہ عوامل مثلاً زمین، مزدوری اور چوزوں کی خوراک دیہی علاقوں میں با آسانی اور وافر دستیاب ہیں اور تجارتی پولٹری فارمنگ کے مقابلے میں اس میں لاگت بھی کم آتی ہے۔نیز گولڈن/ مصری پولٹری فارمنگ ہر طرح کے ماحول (گرم، سرد، مرطوب، خشک اور برساتی موسم) میں نشونما پانے کی صلاحیت کیوجہ سے زیادہ مرغوب ہے۔ لہٰذ ا زرعی ترقیاتی بینک نے اس صنعت کے فروغ کیلئے سکیم ہذا کا اجراء کیا ہے۔

قرضہ سکیم برائے بائیو فلاک فش فارمنگ

بائیو فلاک فش فارمنگ ایک کامیاب اور منافع بخش کاروبار ہے۔ پاکستان نہ صرف مختلف انواع کی مچھلیوں سے حاصل کردہ غذائی ضروریات بھی پوری کرتا ہے۔ بلکہ دوسرے ممالک سے آنے والے آرڈرز کو بھی پورا کرنے کا اہل ہے۔ بائیو فلاک فش فارمنگ کے مقابلے میں روائیتی فش فارمنگ کافی مہنگی اور کم پیداوار کی حامل ہے۔
بائیو فلاک فش ٹیکنالوجی(پی ٹی ایف) ایک ماحول دوست تکنیک کے طور پر سیٹومائیکرواورگنیزم کی تیاری کے لیے استعمال ہوتی ہے۔ یہ مائیکرو اور گنیزم مچھلیوں کی افزائش کیلئے ہائیجینک خوراک کے طور پر تیار کیئے جاتے ہیں، تاکہ مچھلیوں کو قدرتی خوراک بھی مل سکے اور مصنوعی خوراک پر آنے والی لاگت کو بھی کم کیا جا سکے۔اس تیکنیک کی وجہ سے نہ صرف فش پونڈ میں پانی کی صفر یا کم از کم تبادلے کی ضرورت ہوتی ہے بلکہ پانی میں نائیٹروجن اور کاربن کی سطح کو بھی متوازن رکھا جا سکتا ہے جو مائیکرو اور گنیزم اور بیکٹیریا کی مناسب پیداوار کیلئے ضروری ہے۔ اس نئی ٹیکنالوجی کا استعمال نہ صرف شعبہ ماہی گیری کے رجحانات بدل سکتا ہے بلکہ جدید خطو ط پر ماہی گیری کے شعبے میں انقلاب بھی برپا کر
سکتا ہے۔ لہٰذا بینک ہذٰا نے اس فائدہ مند سکیم کا اجراء کیا ہے۔

قرضہ سکیم برائے بہتری زرعی زمین بذریعہ متبادل توانائی

اس وقت ہمارے ملک کو توانائی میں مشکلات کا سامنا ہے۔ جس کی وجہ سے زراعت کے شعبہ کو دھچکا لگا ہے اور اس کے نتیجے میں پیداوار میں کمی آئی ہے۔کسانوں کی مدد اور توانائی میں مشکلات کو کم کرنے کیلئے زرعی ترقیاتی بینک نے دو سکیمیں متعارف کرائی ہیں جن کی مدد سے کسانوں کو کم قیمت توانائی حاصل کرنے اور زراعت کو ترقی دینے میں مدد ملے گی۔ یہ دو سکیمیں زرعی ترقیاتی بینک لمیٹڈ کے قرضہ جات کی مدد سے سولر انرجی پمپ اور بائیو گیس یونٹس کا قیام ہیں۔

قرضہ سکیم برائے خواتین (شعبہ گارمنٹس)

وطنِ عزیز کے پسماندہ علاقوں کی ہنر مند خواتین کی فلاح وبہبوداور معاشی خود کفالت زرعی ترقیاتی بینک کی ترجیحات کا حصہ ہے۔ اس مقصد کے حصو ل کیلئے گارمنٹس کے شعبے میں کام کرنے والی خواتین خصوصاً دستکاری، کشیدہ کاری،چادروں اور کپڑوں پر پھُلکاری اور مخصوص روائیتی کڑھائی کے فن کو اُجاگر کرنے کیلئے مذکورہ بالا سکیم کے تحت قرضہ جات کا آغاز کیا جا رہا ہے تا کہ یہ ہُنرمند خواتین با عزت روز گار بھی پاسکیں اور اپنی محنت کا معقول معاوضہ بھی حاصل کر سکیں۔ اس سلسلے میں بینک سلائی کڑھائی کے ضروری سامان، پیکنگ مٹیریل  اور مارکیٹنگ کیلئے قرضا جات فراہم کرے گا، نیز مصنوعات کی فروخت کیلئے مختلف غیر سرکاری تنظیموں اور رفاہی اداروں کیساتھ روابط میں معاونت بھی کی جائے گی۔

قرضہ سکیم برائے ٹرانسپورٹ(تھری ویلر لوڈر رکشہ)

کسانوں کو اپنی پیداوار  بروقت کھیت سے مارکیٹ تک پہنچانے او ر کاشتکاری کا ضروری سامان مارکیٹ سے فارم تک لانے میں کو آسانی کیلئے  بینک نے مندرجہ بالا سکیم متعارف کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔ جس کے تحت قرضہ برائے حصول تھری ویلر لوڈر رکشہ آسان شرائط  پر فراہم کیا جائے گا۔